شہاب الدین کی موت کے بعدڈپریشن میں حنا شہاب

https://urdu.indianarrative.com/Hina_Shahab_in_depression.jpg

حنا شہاب

طبیعت خراب ہونے کے بعد اسپتال میں داخل، ملنے پہنچے تیجسوی نے ان کے بیٹے اوسامہ کے ساتھ دیر تک کی بات چیت

پٹنہ، 28 جولائی(انڈیا نیرٹیو)

سیوان کے سابق ممبر پارلیمنٹ اور مرحوم شہاب الدین کی اہلیہ حنا شہاب کی طبیعت خراب ہوگئی ہے۔ وہ پٹنہ کے پارس اسپتال میں داخل ہے۔ منگل کی دیررات اپوزیشن لیڈر تیجسوی یادوان کا حال جاننے کے لئے اسپتال پہنچے۔ تیجسوی نے وہاں شہاب الدین کے بیٹے اوسامہ سے ملاقات کی اور حنا شہاب کی طبیعت کے بارے میں معلومات لی۔ شہاب الدین کے انتقال کے بعد ان کی اہلیہ حنا شہاب ڈپریشن کی شکار ہوگئی ہے۔

حنا شہاب کو پانی کی کمی اور ڈپریشن کی شکایت ہے۔ پارس اسپتال کے ڈاکٹروں کے مطابق حناشہاب کی صحت بہتر ہورہی ہے۔ جسم میں پوٹاشیم اور سوڈیم کی کمی تھی، جس کا علاج کیا جارہا ہے۔

شہاب الدین کی موت کے بعد حزب اختلاف کے رہنما تیجسوی یادو نے پہلی بار اپنے کنبہ سے ملاقات کی ہے۔ تیجسوی نے اسامہ سے دیر تک بات کی۔ تیجسوی یادو کے ساتھ راشٹریہ جنتا دل کے سینئر قائدین اودھ بہاری چودھری اور اختر الاسلام شاہین بھی موجود تھے۔ تیجسوی یادو بسکومان میں ایم ایل اے پارٹی کی میٹنگ کر رہے تھے اور میٹنگ میں ہی انھیں اطلاع ملی کہ شہاب الدین کی اہلیہ بیمار ہیں اور ان کا علاج پٹنہ میں جاری ہے۔ میٹنگ کے بعد تیجسوی انہیں دیکھنے اسپتال گئے۔

گذشتہ یکم مئی کو شہاب الدین کے انتقال کے بعد حنا صاحب 3 ماہ 13 دن عدت میں ہے۔ اس دوران ان کی طبیعت کئی بار خراب ہوئی۔ لیکن منگل کی شام اچانک حنا شہاب کی طبیعت خراب ہوگئی، بیٹے اسامہ نے اسے پٹنہ کے پارس اسپتال میں داخل کرایا، جہاں ان کا علاج چل رہا ہے۔ شہاب الدین کی موت کے بعد ا?ر جے ڈی کے رویہ کی وجہ سے شہاب الدین حامیوں میں سخت غم و غصہ ہے۔