آنند بخشی نے اپنے سدا بہار گانوں سے لوگوں کا اپنا دیوانہ بنایا

https://urdu.indianarrative.com/Anand_Bakshi.jpg

آنند بخشی

یوم پیدائش  پر خاص:21 جولائی

بالی ووڈ کے مشہور گیت نگار آنند بخشی، جنہوں نے اپنے سدا بہار گانوں سے سامعین کو دیوانہ بنا دیا ہے، آج بھلے ہی ہمارے درمیان موجود نہیں ہیں، لیکن ان کے گائے ہوئے گانیسننے والوں کو مسحور کردیتے ہیں۔ 21 جولائی، 1930 کو پاکستان کے راولپنڈی میں پیدا ہوئے، آنند بخشی کا پورا نام بخشی آنند پرکاش وید تھا، لیکن ان کا کنبہ انہیں پیار سے نندو کہتا تھا۔ لیکن فلمی دنیا میں، وہ آنند بخشی کے نام سے مشہور ہوئے۔ 1947 میں تقسیم ملک کے بعد بخشی کا پورا کنبہ ہندوستان آگیا۔

 آنند بخشی بچپن سے ہی فلم انڈسٹری میں آنا چاہتے تھے اور نام کمانا چاہتے تھے، لیکن لوگ مذاق نہ اڑائیں اس ڈر سے کسی سے اپنی خواہش نہیں بتائی۔ آنند بخشی نے چھوٹی عمر ہی سے شاعری اور گیت لکھنا شروع کیا تھا۔ فلم انڈسٹری میں آنے سے پہلے، انہوں نے بحریہ میں دو سال کیڈٹ کی حیثیت سے کام کیا۔ کسی تنازعہ کی وجہ سے انہیں ملازمت چھوڑنا پڑا۔ اس کے بعد انہوں نے 1947 سے 1956 تک ہندوستانی فوج میں بھی خدمات انجام دیں۔

 بچپن سے ہی مضبوط ارادوں کے ساتھ، آنند بخشی اپنے خوابوں کو سچ کرنے کے لیے نئی جوش و جذبے کے ساتھ ممبئی واپس آئے، جہاں انہوں اس وقت کے مشہور اداکار بھگوان دادا سے ملاقات کی۔ بھگوان دادا نے انہیں اپنی فلم ’بھلا آدمی‘ میں گیت کارکے طور پرکام کرنے کا موقع فراہم کیا۔ اس وقت آنند بخشی کو ایسا لگا جیسے ان کی خواہش پوری ہوگئی۔یہیں سے انہوں نے اپنے سفر کا آغاز کیا۔