Urdu News

این ڈی اے نے دروپدی مرمو کو اپنا صدارتی امیدوار قراردیا

پانچ ملکوں کے سفیروں نے صدر جمہوریہ ہند کو اسناد پیش کیں

بی جے پی صدر نڈا نے اعلان کیا

قومی جمہوری اتحاد(این ڈی اے)کی جانب سے بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے جھارکھنڈ کی سابق گورنر دروپدی مرمو کو صدر کے عہدے کے لیے اپنا امیدوار قرار دیا ہے۔

پارٹی صدر جے پی نڈا نے منگل کے روز بی جے پی پارلیمانی بورڈ کی میٹنگ کے بعد یہ اعلان کیا۔ انہوں نے کہا کہ انہوں نے خود اور راج ناتھ سنگھ نے کانگریس قیادت کے متحدہ ترقی پسند اتحاد (یو پی اے) کے اتحادیوں سے بات چیت کی لیکن اتفاق رائے نہیں ہوسکا۔ یو پی اے نے آج اپنے امیدوار کے نام کا اعلان کر دیاہے۔ نڈا نے کہا کہ یو پی اے کے اعلان کے بعد این ڈی اے  کی حلیف جماعتوں کے ساتھ بات چیت کی گئی اور بی جے پی کے پارلیمانی بورڈ میں 20 ناموں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

نڈا نے کہا کہ اس بات چیت میں اس بات پر اتفاق ہوا کہ اس عہدے کے لیے شمال مشرقی علاقے سے کسی قبائلی سماج  کے شخص کا انتخاب کیا جائے۔ آج تک قبائلی معاشرے کی کسی خاتون کو اس عہدے پر نہیں فائزکیاگیاہے۔ اسی کو ذہن میں رکھتے ہوئے دروپدی مرمو کے نام پر اتفاق کیا گیا۔مرمو پیشے سے استاد بھی رہ چکی  ہیں۔ اس کے علاوہ وہ جھارکھنڈ کی گورنر بھی رہ چکی ہیں۔

دروپدی مرمو کا ردعمل

صدارتی عہدے کے لیے این ڈی اے کی امیدوار قرار دیئے جانے کے بعد دروپدی مرمونے کہا کہ بی جے پی میرے نام کا صدر کے عہدے کے لئے اعلان کرے گی، اس کا مجھے بالکل اندازہ نہیں تھا۔ ٹیلی ویژن پر اپنا نام سن کر میں حیران رہ گئی اور مجھے کافی خوشی ہوئی۔ ایک قبائلی خاتون کو صدارتی عہدے کا امیدواربناکر بی جے پی نے اپنی پالیسی واضح کی ہے۔ بی جے پی سب کا ساتھ، سب کا وکاس کی پالیسی میں یقین رکھتی ہے۔ 

قابل ذکر ہے کہ موجودہ صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند کی میعاد 24 جولائی کو ختم ہو رہی ہے۔ صدارتی انتخاب کے لیے کاغذات نامزدگی بھرنے کا عمل جاری ہے۔ 29 جون نامزدگی داخل کرنے کی آخری تاریخ ہے۔ سابق مرکزی وزیر یشونت سنہا کو اپوزیشن پارٹیوں نے مشترکہ امیدوار کے طور پر میدان میں اتارا ہے۔

Recommended