وزیر اعظم مودی 07 دسمبر کو پوروانچل کو تین بڑے تحفے میں کیا دیں گے؟

https://urdu.indianarrative.com/modi530.webp

وزیر اعظم مودی 07 دسمبر کو پوروانچل کو تین بڑے تحفے میں کیا دیں گے؟

وزیر اعظم نریندر مودی 7 دسمبر کو پوروانچل کو کئی بڑے تحفے دینے والے ہیں۔ فرٹیلائزر فیکٹری، بی آر ڈی میڈیکل کالج میں جدید ترین لیب اور گورکھپور ایمس کو پوروانچل کے عوام کے حوالے کیا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ اپوزیشن کے لیے جو ناممکن تھا، مودی نے اسے ممکن کر دکھایا۔ وزیر اعظم مودی نے ووٹ کی سیاست نہیں کی اور ریاست کے عوام کی بہتری کے لیے کام کیا۔ اسی لیے ریاستی حکومت اور اس کے عوام 7 دسمبر کو ان کے استقبال کے لیے بے تاب ہیں۔

اتوار کو نامہ نگاروں سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی 7 دسمبر کو تین بڑے پروجیکٹوں کا افتتاح کریں گے، جو ایک بار مشرقی اتر پردیش کا خواب تھا۔ یہ نہ صرف مشرقی یوپی کے نقطہ نظر سے اب تک کی سب سے بڑی سرمایہ کاری ہے بلکہ مشرقی اتر پردیش کے لوگ اس خواب کو پورا ہوتے ہوئے دیکھ رہے ہیں۔ اسے پچھلی حکومتوں نے اپنی ناکامیوں کی وجہ سے مسترد کر دیا تھا۔ 1990 میں گورکھپور میں فرٹیلائزر کارپوریشن ا?ف انڈیا کی کھاد بنانے والی فیکٹری تھی، اسے بند کر دیا گیا۔ اس کی وجہ سے نہ صرف کسان پریشان ہوا بلکہ عام شہریوں کی زندگی متاثر ہوئی۔ گورکھپور اور مشرق کی ترقی بری طرح متاثر ہوئی۔ روزگار اور ملازمتیں ٹھپ ہو گئیں۔ اب یہ خواب پورا ہو گیا ہے۔

وزیر اعظم مودی نے 2016 میں گورکھپور فرٹیلائزر فیکٹری کا سنگ بنیاد رکھا تھا۔ 7 دسمبر کو یہ نئی کھاد فیکٹری ہندوستان فرٹیلائزر کے نام سے ایک شاندار تقریب میں قوم کے نام وقف کی جائے گی۔ یہاں سے 12 لاکھ میٹرک ٹن یوریا پیدا کیا جائے گا۔ اسی طرح یہ کھاد بنانے والی فیکٹری نہ صرف کسانوں کو بروقت کھاد فراہم کرنے میں مددگار ثابت ہوگی بلکہ لوگوں کو روزگار فراہم کرنے میں بھی مددگار ثابت ہوگی۔

وزیر اعلیٰ یوگی نے کہا کہ مشرقی اتر پردیش جو کبھی سیلاب اور بیماریوں کے لیے جانا جاتا تھا، جہاں بے گناہ لوگ مرتے تھے، ان غریبوں کے تئیں حکومتوں کی ہمدردی کبھی نہیں دیکھی گئی۔ انسیفلائٹس کی بات کریں تو 40 سالوں میں ہزاروں بچے مر گئے۔ کوئی ٹھوس انتظام نہیں ہو سکا۔ 2016 میں پی ایم مودی نے ایمس دیا۔ اب ایمس تیار ہے۔ وزیر اعظم مودی ایمس کا افتتاح کریں گے۔