کیریئر کے شروعاتی دنوں میں سینئر کھلاڑیوں کی حمایت سے کافی اعتماد حاصل ہوا: من پریت سنگھ

https://urdu.indianarrative.com/Manpreet_Singh.jpg

من پریت سنگھ

ایک لڑکے کے طورپر ہندوستانی قومی ہاکی ٹیم میں ڈیبیو کرنے کی  ایک دہائی بعد  ٹیم کے  موجودہ کپتان من پریت سنگھ نے اپنے تجربے  کو یاد کرتے ہوئے بتایا کہ کیریئر کے ابتدائی دنوں میں سینئر کھلاڑیوں کے سپورٹ سے انہیں اعتما د حاصل کرنے میں کافی مدد ملی۔

ٹوکیو اولمپکس سے پہلے ہاکی انڈیا کی جانب سے شروع کی جانے والی پوڈ کاسٹ سیریز ہاکی چرچہ میں ایک گفتگو کے دوران، من پریت نے کہا، "جب میں پہلی بار ہندوستانی ٹیم میں آیا تو  ایگنیس ٹرکی، توشار کھانڈکر، شیوندر سنگھ، سردار سنگھ، گرباز سنگھ، سرونجیت سنگھ اور سندیپ سنگھ جیسے کئی بڑے  کھلاڑی تھے“۔

انہوں نے کہا، "ان تمام کھلاڑیوں نے مجھے بغیر کسی خوف اور پریشانی کے اپنا کھیل کھیلنے کا اعتماد فراہم کیا۔ یہاں تک کہ جب میں نے شروع میں کچھ غلطیاں کیں، تب بھی انہوں نے مجھے اپنا مکمل تعاون دیا اور ہمیشہ مجھے بغیر کسی خوف کے میدان  میں خود کو ظاہر کرنے کے لئے حوصلہ دیا۔ وہ  میرے جیسے نوجوان کھلاڑی کے لئے قومی ٹیم میں شامل ہونے کا اچھا ماحول تھا“۔

اپنی  شروعات کے بعد سے، من پریت نے گزشتہ ایک دہائی کے دوران خود کو ہندوستانی مردوں کی ٹیم کے اہم  ممبروں میں سے ایک کے طور پر قائم کیا ہے۔ وہ اس ٹیم کا حصہ رہے ہیں جس نے 2014  ایشین گیمز، 2011 اور 2018 ایشین چیمپئنس ٹرافی جیسے نامور ٹورنامنٹ کے خطاب اور 2015 اور 2017 میں ایف آئی ایچ ورلڈ لیگ میں کانسہ کا تمغہ حاصل کی تھا۔

من پریت کو 2017 میں پہلی بار ٹیم کا کپتان بنایا گیا تھا اور ان کی قیادت میں ٹیم نے ایف آئی ایچ کی عالمی درجہ بندی میں مستقل اضافہ کیا ہے۔اپنے قائدانہ انداز کے بارے میں بات کرتے ہوئے، من پریت نے کہا، "میں نے اپنے پہلے تجربہ کار کھلاڑیوں اور ٹیم کپتانوں سے بہت کچھ سیکھا ہے۔ اس ٹیم میں ہماری ثقافت ہے جہاں سینئر کھلاڑیوں اور جونیئر کھلاڑیوں میں کوئی فرق نہیں ہے۔ ہر کوئی دوسرے ٹیم کے ممبروں کو کھیلنے کے لیے تحریک دیتا ہے۔

 بغیر کسی ہچکچاہٹ اور خوف کے، ہم آن فیلڈ اور آف فیلڈ،دشواریوں کے ذریعہ ایک دوسرے کا ساتھ دیتے ہیں اور ہمیشہ گروپ کے حوصلے بلند کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔اس ٹیم میں بھی، میں ہمیشہ پی آر سری جیش، روپندر پال سنگھ اور بیرندر لاکڑاجیسے تجربہ کار لوگوں کے مشورے اور انپٹس پر توجہ دیتا ہوں۔  ہر کوئی ٹیم کی ترقی میں مدد کرنا چاہتا ہے۔

من پریت کا بین الاقوامی ہاکی میں ایک عمدہ کیریئر رہا ہے۔ وہ ٹوکیو اولمپکس میں ٹیم کی قیادت کرنے کے علاوہ وہ ٹوکیو اولمپک کھیلوں کی افتتاحی تقریب میں ہندوستان کے پرچم بردار بھی ہوں گے۔