ویراٹ کوہلی کیا ذہنی تناؤ کے ہیں شکار ؟ کھلاڑی نے بی سی سی آئی سے ان کے نامناسب رویے کی کیوں کی شکایت ؟

https://urdu.indianarrative.com/Virat-Kohli4.webp

ویراٹ کوہلی کیا ذہنی تناؤ کے ہیں شکار ؟

بھارتی ٹیم کے کپتان ویراٹ کوہلی کے ساتھ سب کچھ ٹھیک نہیں چل رہا جب سے انہوں نے ٹی 20 ورلڈ کپ کے بعد ٹی 20 ٹیم کی کپتانی چھوڑنے کا اعلان کیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ان  کے رویے سے پریشان ایک سینئر کھلاڑی نے بورڈ آف کنٹرول فار کرکٹ ان انڈیا (بی سی سی آئی) کے سیکریٹری جے شاہ سے شکایت کی ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ نیوزی لینڈ کے خلاف ورلڈ ٹیسٹ چمپئن شپ کے آخری میچ میں شکست کے بعد کئی کھلاڑی ان  کے بیان سے ناراض تھے۔

نیوزی لینڈ کے خلاف ڈبلیو ٹی سی فائنل میں شکست کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ویراٹ نے کہا تھا کہ فائنل میچ جیتنے کے بھارتی کھلاڑیوں میں جذبہ اور ارادے کی کمی ہے۔ ان کا یہ بیان ٹیم کے کچھ کھلاڑیوں کے پاس گیا، جس کے بعد انہوں نے جے شاہ سے اس بارے میں بات کی۔  ایک رپورٹ کے مطابق، 'کوہلی اب کنٹرول کھو رہے ہیں۔ وہ اپنی عزت کھو چکے ہیں  اور کچھ کھلاڑی ا ن کا رویہ بالکل پسند نہیں کر رہے ہیں۔ وہ اب ایک متاثر کن کپتان نہیں رہے اور اب وہ کھلاڑیوں کی عزت نہیں کما رہے ہیں۔ جب ان سے  حل کرنے کی بات آتی ہے تو وہ حد سے تجاوز کرتے ہیں۔

اس کے علاوہ اس رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ آج کل بیٹنگ اچھی نہ ہونے   کی وجہ سے ویراٹ کی کوچ سے جھڑپ بھی ہوئی تھی۔  رپورٹ کے  مطابق، 'کوچ اس وقت انہیں بیٹنگ ٹپس دینے کی کوشش کر رہا تھا، لیکن ویراٹ نے  انہیں نظر انداز کر دیا اور کہا کہ مجھے کنفیوز نہ کرو۔ وہ اب ٹیم کو صحیح طریقے سے سنبھالنے کے قابل نہیں ہیں اور یہ ان کے رویے سے ظاہر ہوتا ہے۔

  بتا دیں کہ کوہلی اس وقت متحدہ عرب امارات میں ہیں اور آئی پی ایل 2021 کے بقیہ میچ کھیل رہے ہیں۔ انہوں نے اتوار کو اعلان کیا کہ وہ آئی پی ایل 2021 کے بعد رائل چیلنجرز بنگلور کے کپتان کا عہدہ چھوڑ دیں گے۔ ویراٹ نے اس کا اعلان بنگلور کی جانب سے اپنے ٹوئٹر پر شیئر کی گئی ویڈیو میں کیا۔ کوہلی کی کپتانی میں آر سی بی ٹیم پچھلے 8 سالوں میں ایک بار بھی آئی پی ایل کا ٹائٹل نہیں جیت سکی۔

گوتم گمبھیر نے ویراٹ کوہلی کے آر سی بی کی کپتانی چھوڑنے کے وقت پر سوال اٹھایا

گوتم گمبھیر نے ویراٹ کوہلی کے رائل چیلنجرز بنگلور (آر سی بی) کی کپتانی چھوڑنے کے فیصلے پر بڑا رد عمل دیا ہے۔ انہوں نے ویراٹ کوہلی کے وقت پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ اس وقت کپتانی چھوڑنے کا اعلان نہیں کیا جانا تھا۔

گوتم گمبھیر کے مطابق سیزن کے وسط میں کپتانی چھوڑنے کا اعلان کرنا درست نہیں ہے۔ اس سے کھلاڑیوں کی توجہ ہٹ سکتی ہے اور وہ دباؤ میں آ سکتے ہیں اور اس کا اثر ٹیم کی کارکردگی پر دیکھا جا سکتا ہے۔ اسٹار سپورٹس پر گفتگو کے دوران گوتم گمبھیر نے کہا،میں ویراٹ کوہلی کے ٹائمنگ سے حیران ہوں۔ دوسرے مرحلے کے آغاز سے قبل انہوں نے کپتانی چھوڑنے کا اعلان کیا۔ اگر آپ کپتانی چھوڑنا چاہتے تھے تو آپ آئی پی ایل کے بعد ہی کر تے۔ یہ ٹیم کو بے چین اور جذباتی بھی بنا سکتا ہے۔ اس سے کھلاڑی خود کو  زیادہ پش کرنا  چاہیں گے۔ اس وقت آر سی بی جس طرح کی صورتحال میں ہے، وہ کھلاڑیوں کو خود پر زیادہ دباؤ ڈالنا پسند نہیں کریں گے۔

 گوتم گمبھیر کے مطابق ویراٹ کوہلی کے اس اعلان کے بعد کھلاڑیوں پر دباؤ بڑھ جائے گا اور وہ صرف کوہلی کے لیے آئی پی ایل جیتنا چاہیں گے جو کہ درست نہیں ہے۔ وہ مزید کہتے ہیں،آر سی بی اس وقت ایک بہترین پوزیشن میں ہے اور آپ اضافی دباؤ کیوں ڈالنا چاہتے ہیں۔ شاید آپ ویراٹ کوہلی کے لیے ٹرافی جیتنے کی بات کرتے ہیں اور اس سے دباؤ میں اضافہ ہوگا کیونکہ آپ صرف ایک کھلاڑی کے لیے نہیں بلکہ پوری ٹیم کے لیے ٹرافی جیتنا چاہتے ہیں۔ اگر کوہلی کو کپتانی چھوڑنی ہوتی تو وہ ٹورنامنٹ کے بعد ایسا کر سکتے تھے۔

بتادیں کہ ویراٹ کوہلی نے آئی پی ایل میں آر سی بی کی کپتانی چھوڑنے کا اعلان کیا ہے۔ ویراٹ نے کہا ہے کہ وہ آئی پی ایل کے اس سیزن کے بعد اب ٹیم کے کپتان نہیں رہیں گے۔