ہمیں فالو کریں

بھارت اور بھوٹان کے درمیان روپے دو کا آغاز ایک اچھی پہل

وزیر اعظم نریندر مودی اور بھوٹان کے وزیر اعظم ڈاکٹر لوٹے شیرنگ نے. آج دونوں ملکوں کے مابین اہم روپے پروجیکٹ کے دوسرے مرحلے کا آغاز کیا. دونوں وزرائے اعظم نے روپے پروجیکٹ کے دوسرے مرحلے کا آغاز ورچول ذریعے سے کیا. اور اسے دونوں ملکوں کے درمیان خصوصی تعلقات کی علامت قرار دیا۔ اس پروجیکٹ کے دوسرے مرحلے کی شروعات کے بعد بھوٹان کے نیشنل بینک کی جانب سے جاری کیے گئے. روپے کارڈ سے بھوٹان کے شہری ہندوستان میں کسی بھی طرح کی ادائیگی کر سکیں گے۔ پروجیکٹ کے پہلے مرحلے میں ہندوستانی بینکوں کی جانب سے جاری کیے گئے. روپے کارڈ سے بھوٹان میں ادائیگی کی سہولت کا آغاز کیا گیا تھا۔ پہلے مرحلے کی شروعات مسٹر مودی کی گذشتہ برس اگست میں بھوٹان دورے کے دوران کی گئی تھی۔India Bhutan

I N Bureau Updated November 20, 2020 18:39 IST
India Bhutan new era.PM Modi and the PM of Bhutan jointly launches the RuPay card
India Bhutan new era.PM Modi and the PM of Bhutan jointly launches the RuPay card

ہندستان اور بھوٹان کی دوستی

مسٹر مودی نے کہا کہ اب بھوٹان کے شہری اپنے ملک میں روپے کارڈ سے ہندوستان میں. ایک لاکھ سے زائد اے ٹی ایم اور 20 لاکھ سے زائد پوائنٹ آف سیلس مشینوں پر ادائیگی کر سکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اس سے بھوٹان کے عوام کو تعلیم، صحت، تیرتھ یاترا اور سیاحت کے شعبے میں ادائیگی کرنے کی خاص سہولت ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان روپے نیٹ ورک میں بھوٹان کی مکمل شراکت داری کے بطور خیرمقدم کرتا ہے۔
وزیر اعظم نے کہا کہ ہندوستان خلا کے شعبے میں بھوٹان کے ساتھ تعاون کو تیار ہے۔ ہندوستان کی خلائی تنظیم آئندہ برس بھوٹان کے ایک سیٹیلائٹ کا تجربہ بھی کرے گا. جس کے لیے بھوٹان کے چار نوجوان سائنسداں دسمبر میں ہندوستان جا رہے ہیں۔India Bhutan

دونوں ممالک دوست رہے ہیں

انہوں نے کہا کہ ہندوستان مشکل وقت میں بھوٹان کے ساتھ کھڑا رہا ہے. اور اس کی ضروریات ہمیشہ ہندوستان کے لیے ترجیحی درجے میں رہیں گی۔ ہندوستان اور بھوٹان کے درمیان ایک خصوصی شراکت داری ہے. جو آپسی افہام و احترام سے مشترکہ تہذیبی وراثت اور عوام سے عوام کے مابین مضبوط رشتے کو تقویت دے گی۔

To Top